Prof Arshad Javed Books In Urdu PDF Free Download
 

Forum.Noorclinic.com
Noor Clinic Pakistan Forum

 
Letter to Erfiwa
  Welcome : Guest
Login | Register | Rules
Noor Clinic| Forum | Health| Sex | General |Pakistani Matrimonial| Site Map
Procedure | Recent Post |New Topic | Most Viewed| Paigham e Quran and Hadees
  Ask A Doctor
Warning: This Website is not for people who are less than 16 years of age. Please Exit
 
Medical Forum Categories
Medical Discussion
Unmarried Boys Problems
Unmarried Girls Problem
Married Men Problem
Married Women Problem
Religion and Sex
Religion and Culture
Social Problem
General Health
Non Medical Discussion
Food & Recipes
Sports & Games
Politics
Urdu
Career and Success
Articles
Chatting
Suggestions
Women Health
Men Health
Junk and Spam
NoorClinic
Home(General)
Home(Health and Sex)
Forum Procedure
Noor Clinic Home
Baby Care
Daily Questions
  Start New Topic  My Profile
   

جہیز

Articles   >>  Islamic Articles
   
  Honolulu Hawaii Bar Dance Shows Urdu Safarnama
 
aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:18th Mar 2008, 6:14pm
 

جہیز

 باہم الفت و محبت پيدا کرنے کا ذريعہ ہے، رسول اللہ صلي اللہ عليہ وسلم کا ارشاد ہے [تھادوا تحادوا] يعني ايک دوسرے کو ہديہ ديا کرو تاکہ آپس ميں محبت و الفت پيدا ہو، مگر شريعت نے ہديہ وتحفہ اور باہمي مدد کي جن مصلحتوں کے ليے ترغيب دي ہے آج کل جہيز کے لين دين ميں ان مصلحتوں ميں سے کوئي مصلحت بھي نہيں پائي جاتي بلکہ يہ ہندو معاشرے سے ا?ئي ہوئي ايک ايسي لعنت ہے جس نے  معاشرے ميں بيٹي کي پيدائش کو غريب باپ پر بوجھ بناکر رکھ ديا ہے? پاک وہند کے سوا بقيہ دنيا کے مسلمان آج بھي اس رسم سے بے خبر ہيں۔
    موجودہ دور ميں شادي کے موقع پر طرفين کے ايک دوسرے کو تحفے اور لڑکي کو جہيز دينے ميں جس قدر غلو ہونے لگا ہے اس ميں درجِ ذيل قباحتيں پائي جاتي ہيں:
    ۱ؕ۔ لڑکي کا باپ زبان سے تو لوگوں کو يہي بتارہا ہوتا ہے کہ ميں اپني خوشي سے جہيز دے رہا ہوں مگر حقيقت يہ ہوتي ہے اکثر و بيشتر وہ محض يہ سوچ کر جہيز دينے پر مجبور ہوتاہے کہ اگر نہ ديا تو لڑکي سسرال کے طعنوں کا شکار ہوگي۔ اس صورت ميں اس کے بخوشي جہيز دينے کے زباني دعوؤں کے باعث لڑکے والوں کيليے اس کے ديے ہوئے مال کااستعمال حلال نہيں ہوگا کيونکہ رسول اللہ صلي اللہ عليہ وسلم نے ارشاد فرمايا کہ مسلمان کا مال اس کے دل کي مکمل خوشي کے بغير حلال نہيں ۔
    ۲۔ اللہ تعالٰي نے شوہر کو اپني زوجہ کے ليے دوست ہونے کے ساتھ ساتھ بمنزلہ  حاکم بھي قرار ديا اور اسکي ايک وجہ يہ بيان فرمائي کہ [بما انفقوا من اموالھم] يعني مرد عورتوں پر اپنا مال خرچ کرتے ہيں۔ سوچا جائے کہ اللہ تعال?ي جب شادي سے متعلق اور شادي کے بعد کے جتنے خرچے ہيں سب کے سب مرد کے ذمے ڈال کر اسے حاکميت کا پروانہ عطا فرمارہے ہوں اور مرد محکوم والا کردار ادا کرتے ہوئے سونے کے ليے بستر ، دوستوں اور مہمانوں کو بٹھانے کے ليے صوفے اور کھانا کھلانے کيليے پليٹيں تک بھي بيوي يا اس کے والدين سے وصول کرے تو يہ مرد کے ليے کس قدر سبکي کي بات ہے، مگر دنيا کي محبت نے عقل پر پردے ڈال ديے ہيں اور اس کھلي حقيقت کي طرف دھيان ہي نہيں جاتا۔
    ۳۔ جہيز ديتے وقت فخرو نمود اور دولت کےاظہار کي خاطر اس کي خوب خوب نمائش کي جاتي ہے رسول اللہ صلي اللہ عليہ وسلم نے ارشاد فرمايا کہ جوشخص لوگوں ميں شہرت اور اپنا چرچا کروانے کي نيت سے کوئي عمل کرے گا اللہ تعالي قيامت کے دن لوگوں کے سامنے اس کي اس حرکت کو ظاہر کريں گے (تاکہ سب کے سامنے ذليل ہو)متفق عليہ
    ۴۔ ايک قباحت يہ بھي ہے کہ آج کل جہيز اتني زيادہ مقدار ميں ديا جاتا ہے جس سے لڑکي پر حج فرض ہوجاتا ہے مگر حج کروتے نہيں اور يوں حج ميں سستي کي وجہ سے بيوي سميت شوہر اور بيوي کے والدين سب گناہگار ہوتے ہيں۔
     ۵۔ اس قبيح رسم کي وجہ سے غريب آدمي کے ليے لڑکي کي شادي وبال جان بن گئي ہے وہ جہيز کي مطلوبہ مقدار کو پوري کرنے کے ليے حلال و حرام کي پروا کيے بغير پيسہ حاصل کرنے کي کوشش کرتا ہے اور بعض لوگ اس من گھڑت ضرورت کو پورا کرنے کے ليے صدقات و فطرانہ مانگتے پھرتے ہيں، ايسے لوگوں کو حرام کھانے اور بھکاري بنانے پر مجبور کرنے والے وہ لوگ ہيں جو لڑکيوں سے جہيز وصول کرتے ہيں لہٰذا ايسے لوگ بھيک مانگنے اور حرام ذرائع اختيار کرنے کے جرم ميںان کے ساتھ برابر کے شريک ہيں۔
    ۶۔ جہيز کي مطلوبہ مقدار پوري نہ ہونے کي صورت ميں لڑکي کے نکاح ميںتاخير کي جاتي ہے جس کے نتيجے ميں يا تو بدکارياں ہوتي ہيں يا عزت و عفت محفوظ رکھنے والي لڑکياں گھٹ گھٹ کر نفسياتي پاگل بن جاتي ہيں۔ بہت سوں کو ديگر جسماني عوارض لاحق ہوجاتے ہيں کيونکہ جديد تحقيق کے مطابق لڑکي کي شادي ميں بلوغت کے بعد زيادہ تاخير اس کي صحت کے ليے سخت نقصان دہ ہے، نيز اس تاخير ميں حديث کے اس حکم کي بھي مخالفت ہے جس ميں لڑکي بالغ ہوتے ہي اس کے جلد نکاح کي ترغيب دي گئي ہے۔ رسول اللہ صلي اللہ عليہ نے حضرت علي رضي اللہ عنہ سے ارشاد فرمايا کہ تين چيزوں ميں تاخير نہ کرو ان ميں سے ايک لڑکي کے بالغ ہونے اور مناسب رشتہ ملنے کے باوجود تاخيرکرنا بھي ہے۔(مشکٰوۃ : ۶۱)
    واضح رہے کہ رسول اللہ صلي اللہ عليہ وسلم نے حضرت فاطمہ کو جو جہيز ديا تھا وہ در حقيقت اس رقم سے خريدا تھا جو حضرت علي نے بطور مہر ادا کي تھي۔ کتب حديث و تاريخ ميں اس کي تصريح موجود ہے، ملاحظہ ہو: (الزرقاني:358،360/2)
    خلاصہ يہ کہ جہيز کي مروجہ صورت شريعت، عقل، غيرت کے خلاف ہونے اور مفاسد کثيرہ کي بنا پر ناجائز ہے۔
    البتہ اگر کسي کا داماد واقعي اتنا غريب ہو کہ گھر کا ضروري سامان خريدنے کي قدرت بھي نہ رکھتا ہو تو اس صورت ميں لڑکي کے والدين اگر اس کے ساتھ مالي تعاون کرنا چاہيں تو کوئي حرج نہيں بلکہ باعث ثواب ہے، مگر اس صورت ميں تعاون بھي نقدي کي صورت ميں ہونا چاہيے تاکہ وہ گھر کي ضرورت کي جو اشيا خريدنا مناسب سمجھے خريد سکے اور اگر داماد کو ديني يا دنيوي مشاغل کے باعث خود خريدنے کي فرصت نہ ہو تو ايسے غريب داماد کے ساتھ تعاون کے طور پر لڑکي کے والدين از خود بھي يہ اشيا خريد کر دے سکتے ہيں۔
    جہيز کے معاملے ميں اصل ذمہ داري لڑکے اور اسکے والدين کي بنتي ہے کہ وہ لڑکي والوں کو جہيز دينے سے سختي کے ساتھ باز رکھنے کي کوشش کريں تاکہ لڑکي کے باپ کو مکمل اطمينان ہوجائے کہ لڑکا جہيز سے واقع نفرت کرتا ہے۔ اگر لڑکے والے ايسا نہ کريں اور لڑکي کے باپ کو يہ خيال ہو کہ جہيز نہ ديا تو لڑکي طعنوں کا شکار ہوگي اور اس کي زندگي اجيرن ہوجائے گي تو اس مجبوري ميں ان شاء اللہ اسے جہيز دينے کا گناہ نہ ہوگا، اس صورت ميں گناہ صرف جہيز وصول کرنے والے داماد اور اس کے والدين کو ہوگا۔
style="text-align: right; font-weight: bold;">

aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:19th Mar 2008, 9:34pm
 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

ابھی تک تو کسی نے جہیز نہ لینے کا اعلان نہیں کیا کوئی اشکال ہے؟
Veer Group: Members  Joined: 12th Oct, 2011  Topic: 85  Post: 4723  Age:  34  
Posted on:19th Mar 2008, 9:39pm
 

aasi_nasi

w salam kisi ko post ki samuj ayi gi to koi jawab de ga na

plz aap short aur english mein post typ kare tab he koi read kar sakta hai

aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:19th Mar 2008, 9:52pm
 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

چند وجوہ کی بنا پر میرے لیے یہ ناممکن ہے
البتہ آپ اگر فونٹ بڑا کرنے کا طریقہ بتلادیں تو اس کا ازالہ ہوسکتا ہے
والسلام عاصی
aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:19th Mar 2008, 9:55pm
 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

بصورت دیگر کنٹرول +پلس دبا کر دیکھا جاسکتا ہے
Veer Group: Members  Joined: 12th Oct, 2011  Topic: 85  Post: 4723  Age:  34  
Posted on:19th Mar 2008, 9:55pm
 

w salam

phir aap ki marzi hain main aap ki post samuj nehin paa raha aur wese bhi yeh kafi lambi hai es liye aap es ko dubara typ kar le ta ke aur bhi user aap ki post read kar sakhe plz
aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:19th Mar 2008, 9:58pm
 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

دوبارہ ٹائپ کا مسئلہ نہیں مسئلہ فونٹ سائز کا ہے
اور رہی پوسٹ تو یہ پہلے ہی مختصر ہے مزید مختصر کی تو اہم باتیں چھوٹ جائیں گی!
aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:24th Mar 2008, 4:30pm
 

س

 السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!


shizi Group: Members  Joined: 23rd Mar, 2008  Topic: 13  Post: 288  Age:  31  
Posted on:24th Mar 2008, 7:36pm
 

Salam to all

abht achi bat ki bhai nay.. jahez lanat hai... i hate it...
~~HITMAN~~ Group: Members  Joined: 09th May, 2011  Topic: 122  Post: 4238  Age:  32  
Posted on:25th Mar 2008, 11:58pm
 

aasi

buhut achi baatain ki hain app nay ...........achi post hai .......

par is par amal kon karay ga..........ajkal tou sab hi jaheez detay aur letay hain .....????
aasi_nasi Group: Members  Joined: 04th Mar, 2008  Topic: 5  Post: 33  Age:  31  
Posted on:27th Mar 2008, 6:43pm
 

کیوں نہیں۔۔۔۔۔۔۔؟

 السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
جیسا کہ میں نے بتلایا اس میں اصل ذمہ داری لڑکے اور اس کے گھر والوں پر ہے۔
لہذا ہم تمام لڑکوں کو اس پر عمل کرنے کی کوشش کرنی چاہئے اور اور عمل میں جو رکاوٹیں ہیں ان کو مشورے سے دور کرنا چاہیے،
مجھے امید ہے کہ ہر درد مند مسلمان اس پر عمل ضرور کرے گا۔
اللہ تعالی توفیق دے۔
لیکن یاد رہے
ان مع العسر یسرا، لیس للانسان الا ماسعٰی
اور ہمت مرداں مدد خدا
ارادے جنکے پختہ ہوں نظر جنکی خدا پر ہو
تلاطم خیز موجوں سے وہ گھبرایا نہیں کرتے
البتہ مجھے یہ یقین ہے کہ آپ اور میں تو اس پر انشاء اللہ ضرور عمل کرینگے
والسلام
عاصی
Shahzaib Warraich Group: Members  Joined: 07th Jan, 2012  Topic: 1  Post: 74  Age:  26  
Posted on:9th Jan 2012, 7:05pm
 

jahaiz buri lanat

lgta ap sb angraiz han jo apko simple urdu ki b smj nahi ai. Simply ye kay jahaiz islam mein hram hai. Sadgi se shadi krna islam mein jaiz hai. Log jo marzi baten kren aik kan se suni 2sre se nikal di.
For Detail Click On Page No: 1
 
 
 
 
 
Pakistani Driver Honesty In Dubai  How to find job with no work experience  Anita Dongre Fashion Designer In Dubai
  Prof Arshad Javed Hypnotist and Clinical Psychologist  

 


Warning :The information presented in this web site is not intended as a substitute for medical care. Please talk with your healthcare provider about any information you get from this web site.
© Copyright 2003-2017 www.noorclinic.com, All Rights Reserved Contact Us
Last Updated: 11th Sep 2014